امریکہ افغانستان میں جنگ ھار ر رھا بھارت اپنی ھٹ دھرمی سے باز اے خواجہ آصف ۔

فیصلے کا وقت آگیا، پاکستان دوسرے کی جنگ میں شریک نہیں ہوگا’ خواجہ آصف
نائن الیون کے بعد ذاتی خواہشات کیلئے ملک کو دہشت گردی میں دھکیلا گیا ،سابق فاٹا،سوات اوردیگرعلاقے نشانہ بنے’چار دہائیوں سے ایک خطہ ظلم کاشکار تھا
، دہشت گردی کیخلاف سابق فاٹا کو سہولتیں دیناہوں گی، سارے پاکستان پر فاٹا کی عوام کا قرض ہے،قومی اسمبلی میں اظہار خیال
اسلام آباد(بادبان رپورٹ ) مسلم لیگ (ن) کے رہنما خواجہ آصف نے کہا ہے کہ فیصلے کا وقت آگیا، پاکستان دوسرے کی جنگ میں شریک نہیں ہوگا’ نائن الیون کے بعد ذاتی خواہشات کیلئے ملک کو دہشت گردی میں دھکیلا گیا’دہشت گردی تاریخ کاایک دکھ بھراسبق ہے’کراچی،سابق فاٹا،سوات اوردیگرعلاقے نشانہ بنے’چار دہائیوں سے ایک خطہ ظلم کاشکار تھا، اس خطے میں رہنے والوں کاکوئی قصورنہیں تھا، ہم نے اپنے ملک میں خانہ جنگی کاسامان خودپیداکیا’ سابق فاٹا نے پاکستان کی فرنٹ لائن کا کردار ادا کیا، دہشت گردی کیخلاف سابق فاٹا کو سہولتیں دیناہوں گی، سارے پاکستان پر فاٹا کی عوام کا قرض ہے۔تفصیلات کے مطابق مسلم لیگ ن کے رہنما خواجہ آصف نے قومی اسمبلی میں اظہار خیال کرتے ہوئے کہا چار دہائیوں سے ایک خطہ ظلم کاشکار تھا، اس خطے میں رہنے والوں کاکوئی قصورنہیں تھا، ہم نے اپنے ملک میں خانہ جنگی کاسامان خودپیداکیا۔،خواجہ آصف کا کہنا تھا پاکستان نائن الیون کیبعدجنگ کی لپیٹ میں آگیاتھا، نائن الیون کیبعدذاتی خواہشات کیلئیملک کودہشتگردی میں دھکیلاگیا اور دہشت گردی کانشانہ،کراچی، سابق فاٹا، سوات اور دیگرعلاقے بنے۔مسلم لیگ ن کے رہنما نے کہا دہشت گردی تاریخ کاایک دکھ بھراسبق ہے، صرف اقتدارکوطول دینیکاشوق تھاملک پرتوجہ نہیں دی گئی، امریکااوراس کیساتھ جوممالک ہیں ان کی ابھی تک فتح دوردورتک نہیں۔ ان کا کہنا تھا ہمیں وسائل سابق فاٹاکی بحالی کیلئے استعمال کرنے چاہئیں، سابق فاٹا نے پاکستان کی فرنٹ لائن کا کردار ادا کیا، دہشت گردی کیخلاف سابق فاٹا کو سہولتیں دیناہوں گی، سارے پاکستان پر فاٹا کی عوام کا قرض ہے۔خواجہ آصف کا کہنا ہے کہ فیصلے کا وقت آگیا، پاکستان دوسرے کی جنگ میں شریک نہیں ہوگا۔جمعے کو قومی اسمبلی کے اجلاس میں سابق فاٹا میں قومی وصوبائی اسمبلیوں کی نشستوں کے آئینی ترمیمی بل پربحث کے دوران خواجہ آصف نے کہا کہ فاٹا کے عوام کی دلجوئی پورے پاکستان کی ذمہ داری ہے، فاٹا پر پیش کردہ بل پر تمام سیاسی جماعتیں متحد ہیں۔ خواجہ آصف کا کہنا تھا کہ پاکستان کو2باردوسروں کی جنگ میں جھونکا گیا،اب یہ فیصلہ کرلیا جائے کہ پاکستان کسی دوسرے کی جنگ میں شریک نہیں ہوگا۔ ن لیگی رہنما نے مزید کہا کہ 2آمروں نے اپنے اقتدار کیلئے ملک کو جنگوں میں دھکیلا،جس کا خمیازہ عوام کو بھگتنا پڑا۔ خواجہ آصف نے کہا کہ ایوان سے پیغام دیا جارہا ہے کہ فاٹا کے عوام کا ہم پر قرض ہے، پاکستان کے22 کروڑعوام فاٹا کے ساتھ ہیں، جنہوں نے 80 کی دہائی کے بعد سے کئی قربانیاں دیں ۔ انہوں نے کہا کہ دہشتگردی روکنیکیلئیسرحدوں پرباڑلگائی جارہی ہے،خطیکوامن کاگہوارہ بنانیکیلئے اقدامات کئیگئے،آج ہمیں فاٹا کیعوام کی قربانیوں کویاد رکھناچاہئے۔ سابق وزیرخارجہ نے مزید کہاکہ دہشتگردی کیخلاف جنگ میں پاکستان افواج نیبڑی قربانیاں دیں ،پاکستان کودہشتگردوں کیخلاف جنگ میں فتح نصیب ہوئی،اپنی جغرافیائی حدود کا تقدس برقرار رکھیں گے،پاکستانی عوام تقدس برقراررکھنے کیلئے پاک افواج کیساتھ ہیں۔