انتہا پسند ہندو لیڈروں کی صاحبزادیوں کا مسلمانوں سے نکاح

بھارت میں بین المذاہب شادیاں عام ہیں، یہ اتنی عام بات ہے کہ بین المذاہب شادیوں کی سب سے بڑی مخالف جماعت بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے بڑے بڑے لیڈروں کی لڑکیوں نے بھی مسلم لڑکوں سے شادیاں کی ہیں، جبکہ دیگر بھگوا پارٹیوں کے لیڈروں کی بیٹیاں بھی مسلمان نوجوانوں کے ساتھ بیاہی گئی ہیں۔ انڈین میڈیا رپورٹس کے مطابق مسلمانوں کیخلاف سب سے زیادہ زہر افشانی کرنے والے بی جے پی کے لیڈر سبرامنیم سوامی کی بیٹی سہاسنی نے نعیم حیدر نامی نوجوان کو اپنا رفیق حیات بنا لیا ہے۔ انتہا پسند ہندو تنظیم شیو سینا کے سابق سربراہ بال ٹھاکرے کے بیٹے بندو مادھو ٹھاکرے کی دختر نیہا ایک مسلمان شخص محمد نبی سے رشتہ زوجیت میں بندھی ہوئی ہیں۔ اس عقدِ مسنون کے پُرتکلف استقبالیہ میں ٹھاکرے خاندان کے تمام چیدہ چیدہ لوگ شامل تھے۔ اتنا ہی نہیں بی جے پی کے دو بڑے مسلم چہرے مختار عباس نقوی اور شاہنواز حسین نے بھی ہندو لڑکیوں سے شادیاں کر رکھی ہیں۔
This entry was posted in بین الاقوامی, اہم خبریں. Bookmark the permalink.