بادبان رپورٹ: سی ٹی ڈی کے ہیڈ رائے طاہر خود مرتضیٰ قتل کیس میں ملزم رہ چُکا ہے۔ اس ملک میں مرتضی قتل سے لے کر آج تک جتنے افسران دہشت گردی میں ملوث رہے وہ گریڈ 22 پولیس گروپ میں لے اُڑے ہیں۔ تفصیلات جانئے بادبان رپورٹ میں۔

بادبان رپورٹ
سی ٹی ڈی کے ہیڈ رائے طاہر خود مرتضیٰ قتل کیس میں ملزم رہ چُکا ہے۔
اس ملک میں مرتضی قتل سے لے کر آج تک جتنے افسران دہشت گردی میں ملوث رہے وہ گریڈ 22 پولیس گروپ  میں لے اُڑے۔
شعیب سڈل مرتضٰی قتل کیس میں ملوث اُس وقت کا ایس پی اور بعد میں اسلام آباد کا آئی جی لگا اور پھر بعد میں سندھ پولیس کا آئی جی بھی لگا اور 22 گریڈ میں گیا۔
اسی طرح  مشتاق سکھیرا کو جو سانحہ ماڈل ٹائون میں ملوث تھا،  22 واں گریڈ مِلا، آجکل ٹیکس کا چئیرمین ہے۔
سابق آئی جی زولفقار چیمہ خود پولیس کائونٹر ٹیرارژم کا ہیڈ رہا ہے، اپنے دور میں زولفقار چیمہ بھی قتلِ عام میں ملوث رہا ہے۔  ۔