بھارتی فوج کی فائرنگ سے نابینا ہونیوالی کشیمری لڑکی نے میٹرک کرلیا

تفصیلات کے مطابق گزشتہ سال مقبوضہ کشمیر میں جاری کشیدگی کے دوران بھارتی فوج کی جانب سے مظاہرین پر پیلٹ گن سے اندھادھند فائرنگ کی گئی تھی جس کے نتیجے میں درجنوں چَھرے لگنے سے متعدد افراد شہید اورہزاروں زخمی ہوئے تھے۔ ان میں سے ایک باہمت لڑکی انشاء مشتاق بھی ہیں جنہوں نے چھرّے لگنے سے دونوں آنکھوں سے محرومی کے باوجود صبر و استقامت کا دامن ہاتھ سے نہ چھوڑا۔ ڈاکٹروں کے جواب دینے کے بعد بینائی سے محروم انشا نے فیصلہ کیا کہ وہ تعلیم کا سفر جاری رکھیں گی اور دسویں جماعت کا امتحان نمایاں نمبروں سے پاس کرکے اپنے والدین کا سر فخر سے بلند کرکے عوام کے دل جیت لئے۔ برطانوی نشریاتی ادارے بی بی سی کے مطابق انشاء مشتاق کا کہنا ہے کہ میری قسمت میں جو تھا وہی ہوا، لیکن میرے ارادے کمزور نہ تھے، میں مزید پڑھنا چاہتی تھی تو میرے والدین اور دوستوں نے مجھے حوصلہ دیا۔ انہوں نے مزید کہا کہ آج میں اس کامیابی پر بہت خوش ہوںاور میں چاہتی ہوں کہ نوجوان تعلیم کا سفر کسی بھی قیمت پر جاری رکھیں۔ باہمت کشمیری لڑکی کی کامیابی پر وزیراعلیٰ محبوبہ مفتی، سابق وزیراعلیٰ عمرعبداللہ اور حریت رہنما میر واعظ عمرفاروق نے انہیں مبارکباد پیش کی ہے۔ یاد رہے کہ گزشتہ سال 2016 میں کشمیری نوجوان برہان وانی کے ماورائے عدالت قتل کے خلاف احتجاجی مظاہرے کے موقع پر بھارتی فوج نے پیلٹ گنوں سے اندھا دھند فائرنگ کرکے سولہ افراد کو شہید اور سات ہزار کو شدید زخمی کردیا تھا، جن میں سے درجنوں افراد دیکھنے کی صلاحیت سے محروم ہوئے۔
This entry was posted in بین الاقوامی, قومی, اہم خبریں. Bookmark the permalink.