بھتہ خوری کے الزام میں ایف آئی اے کا افسر گرفتار

ذرائع نے بتایا کہ ایف آئی اے نے مردان کے اسسٹنٹ ڈائریکٹر شاہد الیاس کو اپنے عہدے کا غلط استعمال کرنے اور بھتہ خوری کے الزام میں گرفتار کیا۔

موصول ہونے والی معلومات کے مطابق ایف آئی اے پشاور نے گذشتہ روز شاہد الیاس اور دو دیگر افسران کے خلاف مقدمہ درج کیا۔

ایف آئی اے کے ایک افسر نے اس خبر کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ ’ہاں، ایجنسی نے شاہد الیاس کو گرفتار کیا اور وہ ایک کیس میں اہم ملزم ہیں‘۔

ملزمان کے خلاف درج کی گئی ایف آئی آر کے مطابق ان افسران نے گزشتہ سال 24 دسمبر کو ضلع دیر کے علاقے براول بندا میں چھاپا مارا اور اس دوران انہوں نے ماسٹر گھی کارپوریشن کے مالک محمد یعقوب سے 11 لاکھ روپے اور 44 ہزار 500 سعودی ریال برآمد کیے۔

رپورٹ کے مطابق افسران نے محمد یعقوب کو گرفتار کیا اور پشاور کی جانب روانہ ہوئے، البتہ شاہد الیاس، میر صمد اور اختر حیات نے محمد یعقوب کو پشاور لانے کے بجائے تلاش کے علاقے کے قریب چھوڑ دیا اور چھاپے کے دوران برآمد کی گئی رقم کا غلط استعمال کیا۔

رپورٹ میں مزید بتایا گیا کہ شاہد الیاس نے کسی قسم کی تحریری رپورٹ اعلیٰ افسران کو جمع نہیں کروائی اور نہ ہی مال خانے میں کوئی رقم جمع کروائی تھی، ایف آئی اے نے کیس کی تحقیقات کرنے کی ذمہ داری ایس ایچ او امجد علی کو سونپ دی۔

Be the first to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.