توہین رسالت کے الزام میں 4 افراد پر فرد جرم عائد

انسداد دہشت گردی عدالت کے جج شاہ رخ ارجمند نے ملزمان پر فرد جرم عائد کی۔

علاوہ ازیں عدالت نے فیڈرل انویسٹی گیشن ایجنسی (ایف آئی اے) کو ہدایت کی کہ وہ ملزمان کے خلاف ثبوت پیش کریں جس کے بعد کیس کی سماعت 25 ستمبر تک کے لیے ملتوی کردی گئی۔

واضح رہے کہ ایف آئی اے نے اس وقت تک مذکورہ کیس میں 4 ملزمان کو گرفتار کیا ہے اور یہ ملزمان جوڈیشل ریمانڈ پر جیل میں موجود ہیں، ملزمان پر الزام ہے کہ انہوں نے سوشل میڈیا پر توہین رسالت سے متعلق مواد شائع کیا تھا۔

خیال رہے کہ انسداد دہشت گردی عدالت مذکورہ کیس میں ایک ملزم، کالج کے پروفیسر، کی ضمانت کی اپیل مسترد کرچکی ہے۔

اس سے قبل اسلام آباد ہائی کورٹ نے سوشل میڈیا پر توہین رسالت سے متعلق مواد کے حوالے سے دائر پٹیشن کی سماعت کی تھی اور ملزمان کو اس وقت گرفتار کیا گیا تھا جب یہ کیس اسلام آباد ہائی کورٹ کے جج شوکت عزیز صدیقی کی عدالت میں زیر التوا تھا۔

جسٹس شوکت عزیز صدیقی نے اپنے حکم میں وفاقی حکومت کو ہدایت کی تھی کہ مذکورہ قانون میں ترمیم کرکے اس میں توہین رسالت کا غلط الزام لگانے والوں کے خلاف بھی سزاؤں کا تعین کریں۔

This entry was posted in قومی, اہم خبریں. Bookmark the permalink.