حسن علی کا سرفراز کیساتھ تلخ رویہ خبروں کی زینت بن گیا

تفصیلات کے مطابق پاکستان نیوزی لینڈ کیخلاف حالیہ ٹی 20 میچ جب کیویز ہدف کا تعاقب کر رہے تھے تو پاکستان کا باؤلنگ اٹیک وکٹوں کے لیے سرتوڑ کوشش کررہا تھا،ایسے میں ساتویں وکٹ کے حصول کیلئے جب حسن علی نے اوور کی پہلی گیند باؤنسر کرائی، دوسری پربین وہیلر نے چوکا جڑ دیا تو لائن اور لینتھ درست نہ ہونے پر کپتان سرفراز احمد بات کرنے کے لیے حسن علی کی جانب گئے تاہم حسن علی نے نے توجہ نہ دی اور بولنگ کے لیے واپس چلے گئے، اگلی گیند پر پیسر نے 20گیندوں پر 30رنز بنانے والے بین وہیلر کو بولڈ کرنے کے بعد کپتان کی جانب گھور کر دیکھا اور دیگر فیلڈرز کے ساتھ کامیابی کا جشن بھی منایا جبکہ کپتان سرفراز احمد ایک طرف کھڑے دیکھتے رہ گئے بعد ازاں سرفراز نے حسن علی کو اشارہ کر کے بلایا اور کچھ کہا۔

نجی ٹی وی کے پروگرام میں اس واقعے کی فوٹیج دیکھنے کے بعد سابق کپتان راشد لطیف نے کہا کہ کسی کی پشت پناہی کے بغیر اس طرح کے کام نہیں ہوتے، سرفراز احمد قومی ٹیم کا کپتان ہے اور حسن علی اس کو لفٹ ہی نہیں کرا رہے، ٹیم پہلے ہی ہاررہی ہے، یہ رویہ قابل قبول نہیں، پیسر کو ایک میچ کے لیے باہر بٹھا دینا چاہیے۔

دوسری جانب سابق آل راؤنڈر عبدالرزاق نے کہا کہ کوئی بولر وکٹ حاصل کر کے جشن منانے کے لیے کپتان کی طرف جائے تو اچھا لگتا ہے، یہاں صورتحال مختلف نظر آئی، ایسا نہیں ہونا چاہیے تھا۔

Be the first to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.


*