خون کاعطیہ گویا ایک انسانی جان کا عطیہ ہے

خون کاعطیہ گویا ایک انسانی جان کا عطیہ ہے
  پاکستان سمیت دنیابھرمیں آج خون کے عطیےکا عالمی دن منایا جارہا ہے، ہر سال پاکستان میں سینکڑوں مریض بروقت خون فراہم نا ہونے کے سبب دم توڑ جاتے ہیں۔ عالمی ادارۂ صحت کے تحت دنیا بھرمیں ہرسال چودہ جون کو خون کے عطیات دینے کادن منایا جاتاہے، تاکہ عوام الناس میں خون کا عطیہ دینے کا مثبت رجحان بڑھے۔ اقوامِ متحدہ کے ادارہ برائے صحت نے 2005 میں 58ویں ہیلتھ اسمبلی کے موقع پرمحفوظ انتقالِ خون کو یقینی بنانے کے لئے ہر سال 14 جون کو یہ دن منانے کے فایصلہ کیا گیا۔ خون کے عطیات کا عالمی دن کارل لینڈاسٹینر کی سالگرہ (14 جون 1868) سے منسوب ہے جنہوں نے’’اے بی او بلڈ گروپ سسٹم‘‘ ایجاد کیا تھا جس کی مدد سے آج بھی خون انتہائی محفوظ طریقے سے منتقل کیا جاتا ہے۔ اس سال خون عطیہ کرنے کے عالمی دن کا عنوان ’’میری جان بچانے کا شکریہ‘‘رکھا گیا ہے دنیا بھرمیں سالانہ دس کروڑ سے زائد افراد خون کا عطیہ دیتے ہیں۔ ماہرین کا کہناہے خون عطیہ کرنے سے انسان تندرست اوربے شماربیماریوں سے محفوظ رہتا ہے۔ پاکستان میں ہرسال اندازاً 32 لاکھ خون کی بوتلوں کی ضرورت ہوتی ہے لیکن آگاہی نہ ہونے کے سبب اندازاً صرف 18 لاکھ بوتلیں ہی فراہم ہو پاتی ہیں۔ سولہ سال سے ساٹھ سال تک کی عمرکے افراد خون کاعطیہ دے سکتے ہیں۔ خون کا عطیہ دینے سے کینسر کا خطرہ کم ہوتا ہے، خون کی روانی میں بہتری آتی ہے، دل کے امراض لاحق ہونے کا خطرہ کم ہوتا ہے اورفاضل کیلوریز جسم سے زائل ہوتی ہیں۔ خون کا عطیہ دینے کا سب سے اہم فائدہ یہ ہے کہ عطیہ کنندہ کے خون کی باقاعدگی سے جانچ مفت ہوتی رہتی ہے اور دیگر افراد کی نسبت مہلک بیماریوں اور ان سے بچاؤ کے بارے میں آگاہی ملتی رہتی ہے۔ عالمی دن کے موقع پرملک بھرمیں سمینارز، آگاہی واک اورتقاریب منعقد کی جارہی ہیں جس میں عوام کو خون کا عطیہ دینے کی اہمیت کے بارے میں آگاہی دی جارہی ہے۔ خون کا عطیہ دینے سے پہلے
خون کا عطیہ دینے سےپہلے وافر مقدار میں پانی پینا ازحد ضروری ہے۔ عطیہ دینے سے قبل منساب ناشتہ لازمی کیجئے تاکہ آپ کے خون میں شوگر کا تناسب برقرار رہے۔ خون کا عطیہ دینے سے 24 گھنٹے قبل احتیاطاً سگریٹ نوشی ترک کردیجئے۔ اگر آپ باقاعدگی سے خون کا عطیہ دیتے ہیں تو اپنی مقررہ تاریخ سے دو ہفتے قبل اپنی خوراک میں آئرن کی حامل اشیا کا اضافہ کیجئے جن میں انڈے، گوشت، پالک وغیرہ شامل ہیں۔ خون دینے سے 24 گھنٹے قبل فربہ کرنے والی غذائیں خصوصاً فاسٹ فوڈ کھانے سے گریز کیجئے اگرخون دینے کے دوران آپ کو ہاتھوں یا پیروں میں سردی محسوس ہو تو فوری کمبل طلب کرلیجئے۔ یاد رکھئے اگر آپ شراب نوشی کرتے ہیں تو آخری نرتبہ شراب کے استعمال کے 48 گھنٹے تک آپ خون کاعطیہ نہیں دے سکتے۔ خون کا عطیہ دینے کے بعد
خون عطیہ کرنے کے بعد چند منٹ بستر پرلیٹے رہیے اور اس دوران ہلکی غذا یا جوس لیجئے عموماً یہ اشیا ادارے کی جانب سے فراہم کی جاتی ہیں۔ خون کا عطیہ دینے کے بعد پہلی خوراک بھرپور طریقے لیجئے جس میں پروٹین کی مقدار زیادہ ہو عموماً مرغی یا گائے کا گوشت اس سلسلے میں بہترین ہے۔ خون کا عطیہ دینے کے بعد کم سے کم تین گھنٹے تک سگریٹ نوشی سے پرہیز کیجئے۔ کم سے کم ایک دن تک بھاری وزن اٹھانے اورایکسرسائز سے گریز کیجئے۔
This entry was posted in صحت. Bookmark the permalink.