ساتھی جنوبی افریقی کرکٹرز کو پاکستان لانے میں بھرپور کردار ادا کیا، عمران طاہر

عمران طاہر کا کہنا ہے کہ پاکستان کی طرف سے کھیلنے کا خواب پورا نہ ہوسکا خوش قسمتی سے جنوبی افریقہ میں موقع مل گیا۔ قذافی اسٹیڈیم لاہور میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے لیگ اسپنر نے کہاکہ 5 پروٹیز کرکٹرز ورلڈ الیون کا حصہ ہیں، میں نے اپنے ساتھیوں کو پاکستان لانے کیلیے آمادہ کرنے پر اپنا بھرپور کردار ادا کیا۔ انہوں نے کہا کہ ہم انٹرنیشنل کرکٹ کی بحالی کیلیے آئے ہیں، امید ہے کہ پوری دنیا کو مثبت پیغام ملے گا اوردیگر ٹیمیں بھی پاکستان آئیں گی۔
ایک سوال پر لیگ اسپنر نے بتایا کہ میرے والدیں اب حیات نہیں لیکن بہن بھائی پاکستان میں ہی ہیں،ان کے سامنے کھیلنا فخر کی بات ہوگی۔ ایک اور سوال پر عمران طاہر نے کہا کہ چیمپئنز ٹرافی کی فاتح پاکستان ٹیم کافی خطرناک ہے لیکن ہم بھی پورا ہوم ورک کرکے آئے ہیں، شعیب ملک اورسرفراز احمد اسپنرز کو اچھے انداز سے کھیلتے ہیں جبکہ فخر زمان بھی فارم میں ہیں، ان کیخلاف بولنگ کی منصوبہ بندی کی ہے۔
عمران طاہر نے کہا کہ شاداب خان سے میرا کوئی مقابلہ نہیں، میری اپنی ورائٹی ہے، ہم دونوں کی کوشش ہوگی کہ اپنی بولنگ سے میچ کا پانسہ بدل سکیں، میر ی نیک خواہشات شاداب کے ساتھ ہیں۔انھوں نے کہاکہ قذافی اسٹیڈیم کی فلیٹ وکٹ میرے لیے موزوں نہیں تاہم اس چیلنج پر پورا اترنے کی کوشش کروں گا۔
This entry was posted in کھیل, اہم خبریں. Bookmark the permalink.