سپریم کورٹ: خیبرپختونخوا میں بغیر لائسنس مائننگ پر مکمل پابندی عائد

 

سپریم کورٹ نے خیبرپختونخوا میں بغیر لائسنس مائننگ پر مکمل پابندی عائد کر دی۔ عدالت کا کہنا ہے کہ مائیننگ ڈیپارٹمنٹ 15 روز میں لائسنس کی تمام درخواستوں پرفیصلہ کرے، کوئی حکم امتناع اس عمل میں رکاوٹ نہیں ہوگا۔

چیف جسٹس میاں ثاقب نثار کی سربراہی میں تین رکین بینچ نے سٹون کرشنگ سے متعلق ازخود نوٹس کیس کی سماعت کی۔ خیبرپختونخوا کے چیف سیکریٹری اور سیکریٹری مائیننگ عدالت میں پیش ہوئے۔ عدالت نے خیبرپختونخوا میں بغیر لائسنس مائیننگ پر مکمل پابندی عائد کرتے ہوئے مائیننگ ڈیپارٹمنٹ کو 15 روز میں لائسنس کی تمام درخواستوں پر فیصلہ کرنے کا حکم دیا۔ عدالت نے قرار دیا کہ کسی عدالت کا حکم امتناع پختونخوا ماییننگ ڈیپارٹمنٹ کیلئے رکاوٹ نہیں ہوگا۔ اس دوران مائیننگ عمل کی نگرانی چیف سیکریٹری خود کریں۔ عدالتی حکم کی تعمیل کی ذمہ داری چیف سیکریٹری خیبرپختونخوا پر ہوگی، خیبرپختونخوا مائیننگ سے متعلق کیس کی مزید سماعت 24 جنوری کو ہوگی۔

Be the first to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.