شفقت جلیل نے ایکسٹرنل پبلیسٹی کو بند کرنے کے بعد اب ریڈیو پاکستان کو بھی بند کر دیا۔ ہزاروں ملازمین کا مستقبل خطرے میں۔ دانیال گیلانی جو کروڑوں روپے کی کرپشن میں ملوث اور جس کا بھائی راء کے لئے کام کرتا ہے، نے ریڈیوپاکستان کو بند کرنے کا نوٹیفکیشن جاری کر دیا:بادبان الرٹ

بادبان الرٹ : شفقت جلیل کے ایکسٹرنل پبلسٹی کو بند کروانے کے بعد اب ریڈیو پاکستان کو بھی بند کروا دیا۔ ریڈیو پاکستان کو شفٹ کرنے اور ریڈیو پاکستان کی بلڈنگ کو لیز پر دینے کا نوٹیفیکیشن جاری کر دیا گیا۔ یہ نوٹیفیکیشن دانیال گیلانی جو کہ کروڑوں روپے کی کرپشن میں بھی ملوث ہے اور اُنکا بھائی لندن میں بھارتی ایجنسی راء کے لئے بھی کام کرتا ہے ، نے جاری کیا ہے۔ نوٹیفیکیشن کی تصاویر نیچے ملاحضہ ہے 

 

وفاقی حکومت نے ریڈیوپاکستان ہیڈکوارٹرز اسلام آباد کی کثیرالمنزلہ عمارت کو طویل مدت کے لئے لیز پر دینے کا فیصلہ کرتے ہوئے تمام شعبے پاکستان براڈکاسٹنگ اکیڈیمی کی چھوٹی عمارت میں منتقل کرنے کا حکم دیدیا جس سے ملازمین میں تشویش کی لہر دوڑ گئی ۔ تفصیلات کے مطابق وفاقی حکومت نے نام نہاد کفایت شعاری کی پالیسی کا سب سے پہلا تیر تاریخی سرکاری نشریاتی ادارے ریڈیوپاکستان پر چلادیااور ریڈیوپاکستان ہیڈکوارٹرز اسلام آباد کی کثیرالمنزلہ عمارت کو طویل مدت کے لئے لیز پر دینے کا فیصلہ کرتے ہوئے تمام شعبے پاکستان براڈکاسٹنگ اکیڈیمی کی چھوٹی عمارت میں منتقل کرنے کا حکم دیدیا جس سے ملازمین میں تشویش کی لہر دوڑ گئی ۔ریڈیو پاکستان کی ریڈزون میں سیکٹر جی فائیو میں موجود عمارت7منزلوں پر مشتمل ہے جس میں مختلف شعبے قائم ہونے کے ساتھ ساتھ حساس آلات بھی نصب ہیں۔اتنا اہم ادارہ ہونے کے ناطے ریڈزون میں اس کی سیکیورٹی کرنا بھی انتہائی آسان ہے تاہم اب حکومت نے اس کے تمام شعبے سیکٹر ایچ نائن میں قائم پاکستان براڈ کاسٹنگ (پی بی اے ) کی چھوٹی عمارت میں منتقل کرکے ہیڈکوارٹرز کی عمارت طویل مدت کے لئے لیز پر دینے کا فیصلہ کیاہے اور اس سلسلے میں ڈائریکٹر منسٹرز آفس دانیال گیلانی کے دستخطوں سے جاری ایک نوٹیفکیشن کے ذریعے ریڈیوپاکستان کی ملازمین کو ایک ماہ کے اندر عمارت خالی کرنے کا حکم دیدیاگیا ہے ۔

تاہم حکومت کے اس اچانک اور عجیب فیصلے ادارے کے ملازمین میں سخت تشویش کی لہر دوڑ گئی ہے اور انہوں نے اس پر شدید احتجاج کرتے ہوئے حکومت سے فوری فیصلہ واپس لینے کا مطالبہ کیاہے اور کہاہے کہ عملی طور پر اتنی حساس عمارت کو انتہائی غیر محفوظ اور چھوٹی سی عمارت میں منتقل کرنا ناممکن ہے ۔ تاہم تجزیہ کاروں اور ناقدین کا کہناہے کہ یہ قومی نشریاتی ادارے کو صفحہ ہستی سے مٹانے کی سازش ہے ۔ واضح رہے کہ ریڈیو پاکستان وہ قومی نشریاتی ادارہ ہے جس نے سب سے پہلے ریاست پاکستان کے قیام کی خوشخبری سنائی تھی ۔

 

 

Be the first to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.