عابد باکسر کی سیشن کورٹ میں پیشی، 10 مقدمات میں ضمانت منظور

سابق انسپکٹر عابد باکسر کو ایڈیشنل سیشن جج رحمت علی کے روبرو پیش کیا گیا، عابد باکسر کے وکیل نے موقف اپنایا کہ عابد باکسر کیسز میں شامل تفتیش ہو کر اپنا بیان ریکارڈ کروانا چاہتے ہیں لیکن خدشہ ہے کہ انہیں پولیس مقابلے میں قتل کر دیا جائے گا جس پر عدالت نے 10 مقدمات میں ضمانت منظور کرتے ہوئے سابق پولیس انسپکٹر کو 4 اگست تک گرفتار کرنے سے روک دیا۔

 

سابق انسپکٹر پر قتل، اقدام قتل اور ڈکیتی کے مقدمات درج ہیں۔ اس موقع پر عابد باکسر کا کہنا تھا کہ پہلے جان کو خطرہ تھا، اب وہ تمام مقدمات کا سامنا کریں گے۔

 

ہائیکورٹ کا 27 جولائی کو عابد باکسر کو پیش کرنیکا حکم

 

خیال رہے لاہور ہائیکورٹ نے متعدد مقدمات میں ملوث سابق پولیس انسپکٹر عابد باکسر کو 27 جولائی کو عدالت میں پیش کرنے کا حکم دیا ہے، عابد باکسر کے سسر نے سابق انسپکٹر کے تحفظ کیلئے درخواست دائر کر رکھی ہے۔ درخواست میں موقف اختیار کیا گیا کہ عابد باکسر کی زندگی کو خطرہ ہے لہٰذا تحفظ فراہم کیا جائے۔

 

عابد باکسر سے متعلق وفاقی حکومت کا ہائیکورٹ میں بیان جمع کراتے ہوئے کہنا تھا عابد باکسر کو دبئی سے پاکستان منتقل کر دیا گیا ہے، سابق پولیس افسر کو 19 فروری کو پاکستان منتقل کیا گیا۔

Be the first to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.