عدلیہ کو پارلیمنٹ کے قانون پر نظر ثانی کا اختیار ہے، چیف جسٹس

 

میڈیا کمیشن کیس کی سماعت کے دوران چیف جسٹس نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ پارلیمنٹ سپریم ضرور ہے مگر اس سے اوپر آئین بھی موجود ہے،ہر ادارے کی حدود مقرر ہیں ایوان اگر بنیادی حقوق سے متصادم قوانین بنائے تو عدالت اُس کے جائزے کا اختیار رکھتی ہیں۔

جسٹس ثاقب نثار کا ریمارکس دیتے ہوئے کہنا تھا کہ کسی بھی مقدمے کو سمجھنےکے لیے سوالات کیے جاتے ہیں اور سماعت کے دوران ریمارکس دیے جاتے ہیں، ہم کسی کو ریمارکس سے متعلق وضاحت دینے کے پابند نہیں ہیں، سوالات پوچھنے پر یہ تاثر دیا گیا کہ پارلیمنٹ کی توہین کی گئی، ٹھیک ہے آئندہ ہم سوالات نہیں کریں گے بلکہ فیصلہ دیتے وقت آپس میں ایک دوسرے سے پوچھ لیں گے۔

Be the first to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.