لیگی اراکین پنجاب اسمبلی نے اسمبلی گیٹ کے سامنے دھرنا دے دیا ,,ملک پر راتوں رات 900 ارب کا قرض چڑھ گیا ہے۔ مریم جیل جا سکتی ہے تو علیمہ خان کی بھی آف شور کمپنی ہے اور آج بابر اعوان اربوں کی کرپشن کرکے دندناتے پھر رہے ہیں …حمزہ شہباز

مسلم لیگ (ن) کے صدر شہباز شریف اور قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف شہباز شریف کی قومی احتساب بیورو (نیب) کے ہاتھوں گرفتاری کے معاملے پر اجلاس نہ بلائے جانے کے خلاف احتجاج کرتے ہوئے لیگی اراکین پنجاب اسمبلی نے اسمبلی گیٹ کے سامنے دھرنا دے دیا۔

واضح رہے کہ مسلم لیگ (ن) کی جانب سے سابق وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف کی گرفتاری کے معاملے پر پنجاب اسمبلی کا اجلاس نہ بلائے جانے کے خلاف آج سہ پہر اسمبلی کی سیڑھیوں پر اجلاس بلایا گیا تھا

حمزہ شہباز کا دھرنے سے خطاب

حمزہ شہباز کا پنجاب اسمبلی کے باہر احتجاجی دھرنے سے خطاب کرتے ہوئے کہنا تھا کہ یہ لوگ کہتے تھے بجلی گیس مہنگی نہیں ہو گی مگر دونوں چیزیں مہنگی ہو گئیں، ملک پر راتوں رات 900 ارب کا قرض چڑھ گیا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ نیازی صاحب نے کبھی سچ نہیں بولا، وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار قتل کے مقدمے میں دیت دیکر باہر نکلے جب کہ اربوں روپےکا غبن کرنے والے آپ کے سینیر وزیر بن کر بیٹھے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ اسپیکر پنجاب اسمبلی کا نیا لیڈر عمران خان ہے اور اسپیکر پنجاب اسمبلی 22 ارب روپے لوٹنے والوں میں شامل ہیں۔

حمزہ شہباز کا کہناتھا کہ مریم جیل جا سکتی ہے تو علیمہ خان کی بھی آف شور کمپنی ہے اور آج بابر اعوان اربوں کی کرپشن کرکے دندناتے پھر رہے ہیں۔

حمزہ شہباز کا کہنا تھا کہ نیازی صاحب احتساب گھر سے شروع کریں، کے پی میں میٹرو بس کھنڈر بن چکا ہے۔