مردان میں 4 سالہ بچی کے قتل کا کیس، میڈیکل رپورٹ میں بچی سے زیادتی ثابت

ایک اور ننھی پری درندگی کا نشانہ بن گئی۔ قصور کے بعد مردان میں 4 سال کی بچی کو زیادتی کے بعد قتل کر دیا گیا لیکن درندہ ابھی تک گرفت میں نہ آسکا۔

مردان میں درندگی کے واقعے سے روح کانپ اٹھی، درندے نے 4 سالہ بچی کو موت کی نیند سلا دیا۔ بتدائی میڈیکل رپورٹ کے مطابق بچی کو زیادتی کے بعد گلا گھونسٹ کر قتل کیا گیا۔ واقعے کے بعد پولیس نے 20 افراد کو گرفتار کرلیا تاہم مرکزی ملزم نہ پکڑا جاسکا۔ ابتدائی میڈیکل رپورٹ کے مطابق بچی کو گلا گھونٹ کر قتل کیا گیا۔ تین دن قبل ننھی اسما کی لاش ملی تھی جسے اسپتال لایا گیا جہاں پوسٹ مارٹم رپورٹ میں زیادتی کی تصدیق ہوئی۔

واقعے کے بعد مردان پولیس حرکت میں آئی اور 20 مشتبہ افراد کو حراست میں لیا گیا تاہم مرکزی ملزم پکڑا نہ جاسکا۔ ڈی پی او مردان کا کہنا ہے تحقیقات کے لئے جے آئی ٹی تشکیل دے دی ہے، کچھ مشکوک افراد کو بھی حراست میں لیا گیا، علاقے کی جیو فینسنگ بھی کی جا رہی ہے۔ پولیس نے ملزمان کی گرفتاری میں مدد دینے والوں کے لئے 5 لاکھ انعام کا بھی اعلان کیا ہے۔ قبائلی عمائدین نے بچی قتل کیس میں دہشت گردی کی دفعات شامل کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

خیال رہے 4 سالہ اسماء کا والد بہرام محنت مزدوری کی عرض سے 6 ماہ سے بیرون ملک مقیم ہے۔

Be the first to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.