وزیر داخلہ احسن اقبال سروسز ہسپتال سے ڈسچارج

لاہور: (بادبان نیوز) وزیر داخلہ احسن اقبال کو سروسز ہسپتال سے ڈسچارج کر دیا گیا، انہوں نے اپنے ویڈیو پیغام میں عیادت کیلئے آنے والے تمام افراد کا شکریہ ادا کیا۔ احسن اقبال نے ہسپتال سے باہر آ کر پاکستانی پرچم ہلایا۔

احسن اقبال کا کہنا تھا کہ میری صحت کیلئے فکر مند رہنے والے افراد کا شکریہ ادا کرتا ہوں، ان کا کہنا تھا کہ میں جسم میں تمام زندگی کیلئے وہ گولی لے کر جا رہا ہوں، جو مجھے یاد دلاتی رہے گی کہ ہمیں پاکستان کو امن کا گہوارہ بنانے کیلئے ابھی کتنا کام کرنا ہے۔

احسن اقبال نو روز تک سروسز اسپتال میں زیر علاج رہے جہاں ان کے بازو کا آپریشن ہوا اور پیٹ کی لیپرواسکوپی کی گئی۔اسپتال میں مسلم لیگ ن کے قائد نواز شریف، پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری، وزیراعظم شاہد خاقان عباسی، وزیر خارجہ و دفاع خرم دستگیر، وزیر اطلاعات مریم اورنگزیب، وزیراعلیٰ شہباز شریف اور مولانا فضل الرحمن سمیت مختلف سیاسی و مذہبی رہنماؤں نے ان کی عیادت کی جبکہ پی ٹی آئی کا وفد بھی عیادت کے لئے اسپتال آیا۔

یاد رہے کہ وفاقی وزیر داخلہ احسن اقبال کو 6 مئی کو اس وقت نشانہ بنایا گیا جب وہ نارووال میں پارٹی کی کارنر میٹنگ کے بعد واپس جا رہے تھے۔ وزیر داخلہ احسن اقبال واپس جانے لگے تو ملزم عابد نے انتہائی قریب سے 30 بور کی پستول سے فائر کیا۔ گولی احسن اقبال کے دائیں بازو کو لگی اور پیٹ میں پیوست ہو گئی

Be the first to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.


*