ڈرنے والانہیں آپ کاساتھ ہے تو کوئی کچھ نہیں کرسکتا،نوازشریف

 

تفصیلات کے مطابق سابق وزیراعظم نواز شریف کی نصیر احمد بھٹ کی قیادت میں وکلا کے وفد سے ملاقات ہوئی، ملاقات میں مریم نواز، گورنر پنجاب، راجہ ظفر الحق بھی موجود تھے۔

نااہل وزیراعظم نوازشریف نے وکلا سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ آپ سب وکلا کو سننا چاہتا ہوں،نااہل وزیراعظم نوازشریف کاوکلاسےخطاب یہ 1999 نہیں 2018 ہے، ماضی جب مارشل لا لگتا تھا کسی کو پتہ نہیں چلتا تھا لیکن اب ایسا نہیں، دیکھنا ہوگا کہ کیا ہوا تھا جب ملک کے دوٹکڑے ہوگئے۔

نواز شریف کا کہنا تھا کہ آج بھی ملک میں اس قسم کے کھیل کھیلے جارہےہیں، مارشل لا کو ججز نے ویلکم کیا،مرضی سے آئین میں ترامیم کی گئیں، ایک روپے کی کرپشن بھی مجھ پر ثابت نہیں ہوئی، میرا کالج کی زندگی سےحساب لیاگیا، میرے خلاف جب کچھ نہیں ملاتو اقامہ کو بنیاد بنا لیا گیا۔

عمران خان پر تنقید کرتے ہوئے نااہل وزیراعظم نے کہا کہ عمران خان کا5سال اورمیرا1962سےحساب لیاگیا، عمران خان نے تسلیم کیا آف شورکمپنی ان کی ہے، عمران خان کوبولاگیا نہیں نہیں یہ تمہاری کمپنی نہیں ہے۔


مزید پڑھیں : ہمارےخلاف انتقامی کارروائی ہورہی ہے، ہرسازش کامقابلہ کرونگا، نوازشریف


انکا مزید کہنا تھا کہ اللہ کےفضل سے نوازشریف عوام کی عدالت میں سرخروہوا ، ڈرنےوالانہیں آپ کاساتھ ہےتوکوئی کچھ نہیں کرسکتا، قلعے میں محصور کیا گیا،عدالتوں نے35سال کی سزادی تھی، جج نے سسلین مافیا جیسے الفاظ استعمال کیے، عدالتوں کااحترام کرتےہیں، عدالتوں کو بھی دوسروں کا احترام کرنا چاہیے۔

وکلاسے خطاب میں نوازشریف نے کہا کہ سپریم کورٹ سےاختلاف نہیں لیکن کچھ ججزسےہے، میرےخلاف فیصلہ میرٹ پرنہیں کیا گیا اختلاف ہے۔

سابق وزیراعظم کا کہنا تھا کہ پاکستان نےبہت قربانیاں دی ہیں، آج یہ دن آگیا ٹرمپ آپ کیخلاف ٹوئٹ پرٹوئٹ کررہاہے، بس کریں اس ملک کو آگے لے کر چلنا ہے، آئیں پاکستان کیلئے اور عوام کے لیے کام کریں۔

انھوں نے کہا کہ ووٹ کےتقدس کیلئےتحریک کی بات کی، ہرصورت میں ووٹ کاتقدس بحال ہوگا، ہم حق کی جنگ پرہیں اس کیلئے سب کو ہمارا ساتھ دینا ہوگا۔

Be the first to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.


*