کبھی پانامہ، کبھی ڈان لیکس ہوتی رہتی ہیں، فوٹو لیکس کے سوال پر وزیراعظم کا جواب

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر اعظم نواز شریف کا کہنا تھا کہ لاکھوں بھارتی افواج کشمیریوں کی آواز نہیں دبا سکی، سعودی عرب سے جذبانی لگاؤ ہے لیکن مشرق وسطیٰ میں تمام مسلمان ممالک کو ایک دیکھنا چاہتے ہیں۔ جے آئی ٹی کی فوٹو لیکس سے متعلق سوال کا وزیر اعظم نے خوشگوار موڈ میں جواب دیتے ہوئے کہا کہ کبھی پانامہ لیکس اور کبھی ڈان لیکس ہوتی رہتی ہیں۔ انہوں نے پاکستانی سرزمین کسی بھی ہمسایہ ملک کے خلاف استعمال ہونے کی تردید کر دی۔ اس سے پہلے پاکستان کو شنگھائی تعاون تنظیم کی رکنیت دی گئی۔ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم نواز شریف نے کہا کہ پاکستان علاقائی تعاون کے فروغ میں مؤثر کردار ادا کرنے کے لئے تیار ہے۔
This entry was posted in تفریح, صحت, قومی, اہم خبریں. Bookmark the permalink.