ہندوؤں کو نہتے کشمیریوں پر پتھراؤ کیلئے تربیت دی جانے لگی

مودی سرکار کے چھتر چھایا تلے مقبوضہ کشمیر کے نہتے عوام کے خلاف ایک اور گھناؤنی سازش کا انکشاف ہوا ہے۔ اتر پردیش میں ہندوؤں کو حریت پسندوں پر پتھراؤ کے لیے تربیت دی جانے لگی۔ "جنتا کی سینا" نامی انتہاء پسند گروپ کے ارکان اتر پردیش سے بسوں میں مقبوضہ کشمیر جائیں گے اور قابض افواج کے ساتھ مل کر نہتے کشمیریوں پر پتھر برسائیں گے۔ گروپ کے ارکان کے ساتھ اینٹوں سے بھرے دو ٹرک بھی ہونگے جو وہ پتھراؤ کے لیے استعمال کریں گے۔ ادھر حریت رہنماء میر واعظ عمر فاروق کا کہنا ہے کہ بھارتی حکومت نے کشمیریوں کے خلاف اعلان جنگ کر دیا ہے۔ آزادی کے متوالے آج بھی نماز جمعہ کے بعد سرینگر کی سڑکوں پر نکل آئے اور پاکستانی پرچم لہرا کر بھارت سے آزادی کا مطالبہ کیا
This entry was posted in بین الاقوامی, اہم خبریں. Bookmark the permalink.