اسلام آباد: پولیس اور مظاہرین میں جھڑپیں جاری، ہنگامہ آرائی میں 4 جاں بحق

 

تحریک انصاف اور عوامی تحریک کے کارکنوں اور پولیس میں جھڑپیں وقفے وقفے سے جاری ہیں۔ ہنگامہ آرائی میں 4 افراد دم توڑ گئے۔ خواتین اور پولیس اہلکاروں سمیت 750 زخمی بھی ہیں۔
اسلام آباد:  آج صبح ہوتے ہی اسلام آباد دوبارہ میدان جنگ بن گیا۔ مظاہرین نے وزیراعظم ہاؤس کی طرف پیش قدمی شروع کی جس کے بعد پولیس اور مظاہرین میں جھڑپوں کا سلسلہ پھر شروع ہو گیا۔ پولیس اور مظاہرین نے ایک دوسرے پر پتھراؤ بھی کیا۔ پمز ہسپتال میں زخمی ہونے والے 4 افراد زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑ گئے ہیں۔ رات بھر سے وقفے وقفے سے ہونے والی جھڑپوں میں اب تک 750 افراد زخمی ہو گئے ہیں۔ اس سے پہلے پولی کلینک ہسپتال کے باہر بھی پولیس اور مظاہرین میں ہاتھا پائی اور مار پیٹ ہوئی۔ ذرائع کے مطابق پولیس نے آنسو گیس کے زائد المیعاد شیل فائر کئے جس سے لوگ بیہوش ہوئے۔ صبح مظاہرین اور پولیس اہلکاروں میں ہونے والی جھڑپوں میں کمی آئی لیکن پولیس کے تازہ دم دستوں کی آمد کے ساتھ جھڑپوں میں دوبارہ شدت آ گئی۔ مشتعل مظاہرین نے جگہ جگہ ٹائروں اور دیگر اشیاء کو آگ لگا دی جبکہ کابینہ ڈویژن کے سامنے کھڑے کنٹینر کو بھی آگ لگا دی گئی۔ پولیس کی جانب سے مظاہرین کو پیچھے دھکیلنے کے لئ

Be the first to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.