سب افواہیں ہیں، استعفوں کیلئے ایک سال بھی بیٹھنا پڑا تو بیٹھوں گا: طاہر القادری

 

اسلام آباد : پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ علامہ طاہر القادری نے کہا ہے کہ حکمرانوں کے استعفوں کیلئے ایک سال بھی بیٹھنا پڑا تو بیٹھوں گا، جو کارکن جانا چاہے اسے میری طرف سے اجازت ہے۔ انقلاب مارچ کے شرکاءسے خطاب کرتے ہوئے طاہر القادری کا کہنا تھا کہ شہیدوں کے خون کا بدلہ لینے آیا ہوں اور کارکنوں کیلئے جان دینے کو بھی تیار ہوں، میرے ساتھ وڈیرے نہیں ہیں، مڈل کلاس ہے، کسی جماعت کے کارکنوں نے اتنی قربانی نہیں دی جتنی میرے کارکنوں نے دی ہے، کوئی غلط فہمی میں نہ رہے، حکمرانوں کے استعفوں کیلئے ایک سال بھی بیٹھنا پڑا تو بیٹھوں گا۔ ان کا کہنا تھا کہ میں ظلم کا بدلہ لینے آیا ہوں، اللہ تعالی نے مجھے بہت زیادہ طاقت دی ہے، مجھے اللہ نے فولاد بنایا ہے، کوئی فکر نہیں،میرے عزم کو کوئی متزلزل نہیں کر سکتا، سمجھوتہ کروں گا نہ موقف میں لچک آئے گی، جو کارکن جانا چاہے اسے اجازت دیتا ہوں۔ طاہر القادری نے کہا کہ کچھ لوگوں کہنا ہے کہ میں نے عمران خان کی جانب سے استعفوں تک بیٹھے رہنے کی بات کا جواب نہیں دیا، تو وہ سن لیں، میرا عزم متزلزل نہیں ہو سکتا، استعفوں کیلئے ایک سال بھی بیٹھنا پڑا تو بیٹھوں گا۔

Be the first to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.