ملتان بچانےکیلئےشیرشاہ بندتوڑنےکافیصلہ،شجاع آبادکوبھی خطرہ

 

ملتان :   اٹھارہ ہزاری اور احمد پور سیال میں تباہی مچانے کے بعد سیلابی ریلا مظفرگڑھ اور ملتان کی حدود میں داخل ہوگیا ہے۔ ملتان کو بچانے کیلئے شیر شاہ بند توڑنے کا فیصلہ کر لیا گیا، جس کے بعد شجاع آباد کو خطرہ لاحق ہوگیا۔دریائے چناب کا سیلابی ریلا غیریبوں کیلئے مسلسل امتحان بنا ہوا ہے، بے زور دریا کی موجوں نے ہزاروں خاندانوں کو بے یار و مدد گار کردیا، منہ زور سیلابی ریلا ملتان کے سر پر آن پہنچا ہے، جب کہ جھنگ شہر کو بچانے کے لیے اٹھارہ ہزاری کو ڈبو دیا گیا تو ملتان کو بچانے کیلئے شجاع آباد کو قربان کرنے کی تیاری ہے۔بڑا آبی ریلا ملتان اور مظفر گڑھ کی حدود میں داخل ہے، ملتان شہر کو بچانے کے لئے ہیڈ محمد والا بند کے قریب سڑک پر کٹ لگا دیا گیا۔ قاسم بیلہ، مظفرآباد اور شیر شاہ کے دیہات زیرآب آنے کا خدشہ بڑھ گیا۔ خطرہ دیکھتے ہی شیرشاہ بند توڑ دیا جائے گا جس کیلئے تیاری مکمل کرلی گئی ہیں، تاہم اس اقدام سے شجاع آباد کو شدید نقصان پہنچے گا، صورت حال زیادہ بگڑی تو دوآبہ بند بھی توڑا جائے گا، جس سے مظفرگڑھ کو خطرہ ہوگا۔اس وقت ملتان کے قریب دریائے چناب میں ساڑھے چارلاکھ کیوسک کا سیلابی ریلا گزررہا ہے،جہاں پاک فوج کے جوان اور انتظامیہ ہائی الرٹ ہے، ادھر مظفرگڑھ میں ہیڈ پنجند کے مقام پر پانی کی سطح میں مسلسل اضافہ ہو رہا ہے۔ انتظامیہ نے اطراف کے علاقوں میں ریڈ الرٹ جاری کر دیا ہے۔ فوج کے دستے تحصیل علی پور اور جتوئی میں بھی پہنچ گئے ہیں۔

Be the first to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.