سکھوں کا اغوا اور قتل، وفاقی حکومت نے خیبرپختونخوا حکومت کو مراسلہ ارسال کر دیا

 

اسلام آباد:سکھوں کے اغواءاور قتل پر وفاقی حکومت نے پختونخوا حکومت کو مراسلہ لکھا ہے جس میں اقلیتوں کے جان و مال اور عبادت گاہوں کی حفاظت یقینی بنانے کی ہدایت کی گئی ہے۔تفصیلات کے مطابق وفاقی حکومت نے خیبرپختونخوا میں سکھوں کے اغواءاور قتل کے واقعات کا نوٹس لیتے ہوئے صوبائی حکومت ہدایت کی ہے کہ اقلیتوں کے جان و مال اور عبادت گاہوں کی حفاظت کو یقینی اور سکھوں کے قتل میں ملوث ملزمان کو گرفتار کیا جائے۔ وفاقی حکومت کی جانب سے جاری مراسلے میں صوبائی حکومت کو ہدایت کی گئی ہے کہ سکھوں کے اغوا اور قتل کے واقعات میں ملوث ملزمان کو گرفتار کیا جائے اور اقلیتوں کے جان و مال اور عبادت گاہوں کے تحفظ کو یقینی بنایا جائے۔ اقلیتی وفد نے چند روز قبل وفاقی حکومت سے شکوہ کیاتھا کہ خیبر پختونخوا میں اقلیتوں کے لئے حالات مناسب نہیں ہیں ، چند ماہ کے دوران صوبے کے مختلف اضلاع میں پانچ سکھوں کو قتل کیا گیا جبکہ اغوا برائے تاوان کی وارداتوں میں بھی اضافہ ہوا ہے، وفد نے وفاقی حکومت کو آگاہ کیا تھا کہ خوف کے باعث بعض سکھ تاجر اپنی دکانوں پر نہیں جارہے ہیں۔

Be the first to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.