سندھ پولیس اوررینجرز کی کارروائیاں،گینگ وار کے 5 مبینہ ملزمان ہلاک

 

شہر قائد میں پولیس اور رینجرز کی مشترکہ کارروائیوں کے دوران 5 ملزمان ہلاک ہو گئے جب کہ کئی مشتبہ افراد کو حراست میں لے لیا گیا ہے۔تفصیلات کے مطابق ملیر کے علاقے بھون شاہ مزار کے قریب رینجرز اور پولیس نے چھاپا مارا، کارروائی کے دوران فائرنگ کے تبادلے میں گینگ وار کے 4 ملزمان مارے گئے۔ پولیس ذرائع کا دعوی ہے کہ ہلاک ہونے والے ملزمان کا تعلق با با لاڈلہ گروپ سے ہے، ان میں سے ایک ملزم کی شناخت ڈاکٹرشعیب کے نام سے ہو ئی ہے جو گینگ وار کا مقامی کمانڈر بتایا جاتا ہے جب کہ دیگر 3 افراد کی شناخت نہیں ہو سکی، ملزموں کے قبضے سے 3 دستی بم اور تین پستول بھی برآمد ہو ئے ہیں۔
دوسری جانب لیاری کے علاقے رانگی واڑہ میں بھی قانون نافذ کر نے والے اہل کاروں اورگینگ وار ملزموں کے درمیان فائرنگ کا تبادلہ ہوا جس میں ایک ملزم سلمان ہلاک ہو گیا۔رینجرز ذرائع کے مطابق مرنے والے ملزم کا تعلق عزیر بلوچ گروپ سے تھاجو ٹارگٹ کلنگ ، اغوا برائے تاوان اور رینجرز کی موبائل پرحملے میں بھی ملوث تھا۔
دوسری طرف کالعدم تنظیم کے کارندوں کی موجودگی کی اطلاع پر کراچی پولیس نے منگھوپیر میں رات گئے سرچ آپریشن کیا جس میں دس سے زیادہ مشتبہ افراد کو حراست میں لیا گیا ہے۔پولیس کے مطابق منگوپیر کے علاقے سلطان آباد اور محمود گوٹھ میں کالعدم تنظیموں کے کارندوں کی موجودگی پر آپریشن کیا گیا جس میں دو سو سے زائد پولیس اہلکاروں نے حصہ لیا۔ آپریشن کے دوران علاقے کے داخلی اور خارجی راستوں کو بند کرکے گھر گھر تلاشی لی گئی۔اس دوران دس سے زائد مشتبہ افراد کو حراست میں لیکر تفتیش کیلئے نامعلوم مقام منتقل کردیا گیاہے۔ ادھر لیاری کے علاقے رانگیواڑہ میں رینجرز سے مقابلے میں گینگ وار کا کارندہ سلمان ماراگیا۔ ترجمان رینجرز کے مطابق ملزم متعدد قتل، اغواءبرائے تاوان کی وارداتوں اور 14 فروری کو رینجرز موبائل پر حملے میں بھی ملوث تھا۔

Be the first to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.