شمالی کوریا میں انٹرنیٹ جزوی بحال ہوگیا

 

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق انٹرنیٹ کی فراہمی میں یہ رخنہ امریکا کے اس اعلان کے اگلے دن ہوا جس میں اس نے سونی پکچرز پر اس سائبر حملے کا مناسب جواب دینے کو کہا تھا جس کے لئے وہ شمالی کوریا کو ذمہ دار ٹھہرا رہا ہے۔ شمالی کوریا کے سربراہ کم جونگ ان پر قاتلانہ حملے کی کہانی والی مزاحیہ فلم بنانے پر ہیکرز نے سونی پکچرز کو نشانہ بنایا تھا اور سونی کو اس فلم کی ریلیز روکنی پڑی تھی۔ وائٹ ہائوس نے اس سائبر حملے کو قومی سلامتی کا معاملہ قرار دیا تھا اور پھر امریکی صدر براک اوباما نے شمالی کوریا کی حکومت پر اس حملے کا الزام عائد کیا تھا۔ تاہم امریکا نے شمالی کوریا میں انٹرنیٹ کی اس بندش پر کچھ کہنے سے گریز کیا ہے۔ ڈائن ریسرچ کا کہنا ہے شمالی کوریا میں نو گھنٹے 31 منٹ تک انٹرنیٹ سروس منقطع رہنے کے بعد جزوی طور پر بحال ہوئی ہے۔ منگل کو شمالی کوریا کی سرکاری نیوز ایجنسی کے سی این اے کی ویب سائٹ بحال ہو چکی ہے لیکن یہ بحالی بھی ابھی مستقل نظر نہیں آ رہی ہے جبکہ دوسری بہت سی ویب سائٹیں ابھی بھی پہنچ سے باہر ہیں۔ پیانگ یانگ سے بھی اس بارے میں ابھی تک کوئی بیان نہیں آیا ہے لیکن امریکا میں ماہرین کا کہنا ہے کہ شمالی کوریا کی انٹرنیٹ سروس بحال ہو گئی ہے۔ تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ ملک سے انٹرنیٹ کے غائب ہونے کا سبب یا تو تکنیکی ہو سکتا ہے یا پھر سائبر حملے کی وجہ سے ایسا ہوا ہے۔

Be the first to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.