دہشت گردو تمہارا وقت پورا ہوگیا: وزیر اعظم کی وارننگ

 

اسلام آباد: وزیراعظم نواز شریف نے دہشت گردوں کو فیصلہ سناتے ہوئے کہا دہشت گردو تمہارا وقت پورا ہوگیا اور کراچی تا خیبر امن لوٹانے کا وعدہ کیا۔
پارلیمانی رہنماؤں کے اجلاس کے بعد قوم سے خطاب سے انہوں نے کہا سفاک قاتلوں نےقوم کے سینے پر گہرا زخم لگایا ہے۔ ہم اپنے بچوں کے لہو کا حساب لیں گے۔

وزیر اعظم نواز شریف نے قوم سے خطاب کرتے ہوئے جذباتی ہوگئے۔ انہوں نے سانحہ پشاور میں جاں بحق بچوں کو اپنے بچے قرار دیا اور کہا کہ دہشت گردوں کے دن گنے جاچکے ہیں۔

وزیر اعظم نواز شریف نے کہا کہ سفاک قاتلوں نے عوام کےسینوں پرگہرا زخم لگایا ہے۔ معصوم بچےعلم کی لگن میں گھروں سے نکلے اور اُنہیں خون سے نہلا دیا گیا۔

وزیراعظم نے آیندہ نسل کو پرسکون اور قائداعظم کا پاکستان دینے کا وعدہ کیا۔ اور کہا کہ سانحہ پشاور کے بعد کا پاکستان بدل رہا ہے۔

وزیراعظم نواز شریف نے امن کو مشترکہ اثاثہ قرار دیا اور کہا کہ آئندہ نسلیں پاکستان میں سکون کی زندگی گزاریں گی۔
نوازشریف کا کہنا تھا کہ سانحہ پشاور کے بعد پاکستان بدل چکا ہے۔
انہوں نے کہا کہ مذاکرات کے بے نتیجہ ہونے پر آپریشن ضرب عضب کا آغاز کیا۔ دہشت گردی کی فکر اور سوچ کا بھی خاتمہ کریں گے۔

بعد ازان انہوں نے اے پی سی کے 20 متفقہ نکات پڑھ کر سنائے۔

1۔ پھانسی پر عملدرآمد شروع ہوچکا ہے۔

2۔ فوجی افسران کی سربراہی میں اسپیشل ٹرائل کورٹس دو سال کے لیئے قائم کی جائیں گی۔

3۔ عسکری تنظیموں کی اجازت نہیں ہوگی۔

4۔ نیکٹا کو فعال اور مضبوط بنانے کا فیصلہ

5۔ نفرتیں ابھارنے اور فرقہ واریت کو فروغ دینے والے لٹریچر کیخلاف کارروائی کا فیصلہ

6۔ دہشتگردوں کے وسائل اور فنڈنگ ختم کیے جائیں گے

7۔ کالعدم تنظیموں کو دوسرے نام سے کام کرنیکی اجازت نہیں ہوگی۔
8۔ خصوصی انسداد دہشت گردی فورس تشکیل دی جائے گی۔

9۔ انتہاپسندی روکنے اور اقلیتوں کا تحفظ یقینی بنایا جائے گا۔

10۔ دینی مدارس کی رجسٹریشن کی جائے گی۔

11۔ الیکٹرونک اور پرنٹ میڈیا پر دہشتگردوں اور ان کی نظریات کی تشہیر پر مکمل پابندی ہو گی۔

12۔ آئی ڈی پیز کی فوری واپسی اور فاٹا میں اصلاحات

13۔ دہشتگردوں کے مواصلاتی نیٹ ورک کا خاتمہ

14۔ سوشل میڈیا پردہشتگردی کے فروغ کی روک تھام کیلئےاقدامات

15۔  پنجاب سمیت ملک بھر میں عسکریت پسندی برداشت نہ کرنے کی پالیسی

16۔ کراچی آپریشن کو منطقی انجام تک پہنچایا جائے گا۔

17۔ حکومت بلوچستان کومکمل اختیارات دینے کا فیصلہ

18۔ فرقہ واریت پھیلانے والوں کیخلاف فیصلہ کن کارروائی ہوگی

19۔افغان مہاجرین کی رجسٹریشن کیلئے جامع پلان

20۔ فوجداری عدالتی نظام میں بنیادی اصلاحات کا فیصلہ ۔۔

Be the first to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.