ہٹلر سے مشابہت والی تصاویر، جرمنی میں اسلام مخالف تنظیم کا سربراہ مستعفی

 

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق جرمنی میں اسلام مخالف یورپی تنظیم ’پیگیڈا‘ کے سربراہ تارکین وطن کے خلاف توہین آمیز بیان دینے اور ہٹلر سے مشابہت رکھنے والی تصاویر شائع ہونے کے بعد اپنے عہدے سے الگ ہو گئے ہیں۔ اسلام مخالف یورپی تنظیم ’پیگیڈا‘ (پیٹریاٹک یورپیئنز اگینسٹ اسلامائزیشن) کا دعویٰ ہے کہ جرمنی پر ایک لحاظ سے مسلمانوں اور دیگر تارکینِ وطن نے قبضہ کر لیا ہے۔ تنظیم کے رہنماء لٹز بیچمین نے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ فیس بُک پر ایک بیان میں تارکین وطن کو ’جانور اور قابل نفرت‘ کہنے پر معافی مانگی ہے۔ انھوں نے ملک کے سابق آمر اڈولف ہٹلر سے ملتی جلتی تصویر شائع ہونے کے بارے میں کوئی بیان نہیں دیا ہے تاہم انھوں نے اس تاثر کو رد کیا کہ وہ نسل پرست ہیں۔ لٹز بیچمین نے کہا ہے کہ ان کے مستعفی ہونے کے باوجود ان کی تنظیم اپنی مہم جاری رکھے گی۔ دوسری جانب مشرقی جرمنی کے شہر لیپزگ میں پیگیڈا کے حامیوں اور ان کے مخالفین کے درمیان ممکنہ جھڑپوں کو روکنے کے لئے پولیس کی بھاری نفری تعینات کی گئی تھی۔ لٹز بیچمین کی مخالفت میں اس وقت جلوس نکالا گیا جب انھوں نے تارکین وطن کے بارے میں توہین آمیز بیان پر معافی مانگی۔ پیگیڈا کی ترجمان کیھترین اورتٹل نے کہا کہ تارکین وطن کے بارے میں بیان حد سے بڑھ گیا تاہم انھوں نے ہٹلر سے مشابہت والی تصویر کو ’ایک مذاق‘ اور طنز قرار دیتے ہوئے کہا کہ ایسا کرنا ہر شہری کا حق ہے۔ –

Be the first to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.