‘فوج سٹیٹس کو کے حق میں نہیں، مشترکہ تعاون اور اعتماد ہی بہترین راستہ ہے’

آئی ایس پی آر کے مطابق، آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے کور ہیڈکوارٹرز پشاور کا دورہ کیا۔ آرمی چیف کو پاک افغان سرحدی صورتحال پر بریفنگ دی گئی۔ اس موقع پر بات کرتے ہوئے آرمی چیف نے کہا کہ پاکستان اور افغانستان کو خطرات سے نمٹنے کے لئے الزام تراشی کی بجائے باہمی اعتماد اور ربط کے ساتھ جواب دینا ضروری ہے۔ آرمی چیف نے مزید کہا کہ پاکستان مسلسل انٹیلیجنس شیئرنگ کر رہا ہے، پاک آرمی کسی بھی خفیہ معلومات پر ایکشن لینے کے لئے بھرپور تیار ہے۔ آرمی چیف نے مزید کہا کہ اس وقت ہماری توجہ فاٹا میں آپریشن سے حاصل کی گئی کامیابیوں کو امن و استحکام کے لئے برقرار رکھنے پر ہے، پاک فوج فاٹا اصلاحات کی بھرپور حمایت کرتی ہے۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ فوج ملک کو برائیوں سے پاک کرنے کیلئے اداروں کے ساتھ کھڑی ہے، فاٹا کو قومی دھارے میں لانے کے لئے اصلاحات کاعمل ضروری ہے، فوج سٹیٹس کو کے حق میں نہیں، مشترکہ تعاون اور اعتماد ہی بہترین راستہ ہے۔

Be the first to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.