پانامہ کیس کی تحقیقات کا فائنل راؤنڈ کل سے شروع

 

فیڈرل بورڈ آف ریونیو کے ذرائع نے دنیا نیوز کو بتایا ہے کہ جے آئی ٹی کو خط میں لکھا ہے کہ شریف خاندان کا جتنا ریکارڈ دستیاب تھا فراہم کر دیا۔ تاہم، جب شریف فیملی اور وزیر خزانہ اسحاق ڈار بیرون ملک تھے، اس وقت کا ریکارڈ موجود نہیں ہے۔ وزیر اعظم، ان کا خاندان اور اسحاق ڈار جب ملک سے باہر تھے تو ان کیلئے رِٹرنز فائل کرنا ضروری نہیں تھا، خط میں مزید لکھا گیا ہے کہ شریف خاندان کا کچھ ریکارڈ نیب کو دیا گیا تھا، اگر وہ مل گیا تو فراہم کر دیا جائے گا جبکہ دفتر کی تبدیلی کے دوران کچھ ریکارڈ گم ہو گیا تھا۔

Be the first to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.