آرمی چیف کے پارلیمنٹ کو اعتماد میں لینے پر خوشی ہوئی ، بلاول بھٹو اپوزیشن کا احتساب لیکن کالعدم تنظیموں کا احتساب کیوں نہیں،؟ پلوامہ واقعہ کشمیریوں پر مظالم کا ردعمل ہے، چیئرمین پیپلزپارٹی کا قومی اسمبلی میں خطاب اسلام آباد(بادبان رپورٹ)پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ گجرات کا قصائی مودی اپنی سیاست کیلئے جنگی جنون پھیلا رہا ہے ،وہ گجرات کے مسلمانوں کا قاتل ہے، پلوامہ واقعہ کشمیری نوجوان کا بھارتی ظلم و ستم کا ردعمل تھا،سانحہ آرمی پبلک اسکول کے بعد نیشنل ایکشن پلان تشکیل دیا گیا پھر کیا بنا نیشنل ایکشن پلان کا؟ اپوزیشن کا تو احتساب کیا جارہا ہے ، کالعدم تنظیموں کا احتساب کیوں نہیں کیا جارہا، ہم خارجہ پالیسی و معیشت جیسے مسائل پر حکومت سے تعاون کیلئے تیار ہیں، ہمیں خوشی ہے کہ وزیراعظم عمران خان کو نوبل انعام ملنے پر یوٹرن لیا گیا، میں بھارتی جہاز گرانے والے پائلٹس کو سلام پیش کرتا ہوں۔اسپیکر اسد قیصر کی زیر صدارت قومی اسمبلی کے اجلاس میں خطاب کرتے ہوئے انہوں نے بھارتی طیارہ مار گرانے پر پاک فضائیہ کے پائلٹ حسن صدیقی کو خراج تحسین پیش کیا اور کہا کہ ‘ہماری فضائیہ نے ثابت کیا کہ وہ دنیا کی بہترین ایئر فورس ہے۔اس موقع پر بلاول بھٹو نے لائن آف کنٹرول پر بھارت کی بلا اشتعال فائرنگ سے شہید ہونے والے حوالدار عبدالرب اور خرم کو بھی خراج تحسین پیش کیا۔انہوں نے کہا کہ دنیا بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کو نہیں جانتی ہو گی لیکن برصغیر کے مسلمان گجرات کے قصائی کو اچھی طرح جانتے ہیں جنہیں امریکا نے اپنے ملک میں داخلے پر پابندی لگا دی تھی۔انہوں نے حالیہ جارحیت کی ذمہ داری بھارتی وزیراعظم پر عائد کرتے ہوئے واضح کیا کہ انتہاپسند کے حامل بھارتی حکومت سمجھتی ہے کہ نفرت کا پرچار کرکے وہ انتخابات جیت جائے گی۔ان کا کہنا تھا کہ پاکستان نے بھارتی جارحیت کو کم کرنے میں سنجیدہ اور مثبت رویہ اختیار کیا۔کشمیر سے متعلق پیپلز پارٹی کے چیئرمین نے مطالبہ کہ کشمیرمیں استصواب رائے کے لیے اقوام متحدہ کی قرار داد پر عمل کرایا جائے کیونہ اس کی بنیاد پر ہی بھارت پر حملے رک سکتے ہیں۔انہوں نے تمام حکومتی اور اپوزیشن جماعتوں کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ یہ لمحہ قابل فخر ہے کہ تمام اراکین قومی اسمبلی نے بھارتی جارحیت کے خلاف مشترکہ ردعمل کا اظہار کیا۔پی پی پی چیئرمین نے کہا ہم ذوالفقارعلی بھٹو اور بینظیر بھٹو کو خراج تحسین پیش کرتے ہیں جنہوں نے ملک کو جوہری طاقت بنایا اورملک کی جوہری ومیزائل صلاحیت کوترقی دی۔بلاول بھٹو نے واضح کیا کہ اپوزیشن کے کسی رکن نے وزیراعظم عمران خان کوامن کی خواہش پرسیکیورٹی رسک نہیں کہا۔ان کا کہنا تھا کہ اوآئی سی اجلاس میں شرکت نہ کرکیاپنامؤقف پیش کرنیکاموقع ضائع کیا گیا۔انہوں نے بھارتی جنگی قیدی وینگ کمانڈر ابھی نند سے متعلق موقف اختیار کیا کہ وزیراعظم نے بھارتی پائلٹ کو واپس کرنے میں جلدی کی۔وزیراعظم عمران کے لیے نوبل انعام سے متعلق بلاول بھٹو نے کہا کہ قومی اسمبلی سیکریٹریٹ میں وزیراعظم کونوبل انعام دینے کی قرارداد جمع کرائی گئی، اگریہ قراردادایوان میں منظور یامسترد ہوتی تو پاکستان کی جگ ہنسائی ہونی تھی۔ان کا کہنا تھا کہ اچھاہواکہ قرارداد واپس لے لی گئی حکومت نے ایک اور یوٹرن لے لیا۔قومی اسمبلی کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے پی پی پی کے چیئرمین بلاول بھٹو نے کہا کہ حکومت کی کوئی سمت نظر نہیں آرہی۔انہوں نے دعویٰ کیا کہ معیشت کی بہتری کے لیے کوئی اصلاحات دیکھنیمیں نہیں آرہیں ۔ان کا کہنا تھا کہ بجٹ میں کسانوں کے لیے کچھ نہیں اور بجٹ میں کراچی کو پھر نظرانداز کیا گیا۔بلاول بھٹو نے کہا کہ ‘ایک سال میں ٹیکس 3بار بڑھایا جاچکا ہے، خارجہ پالیسی،معیشت جیسے مسائل پرحکومت کیساتھ کام کرنے پرتیارہیں ۔

March 6, 2019 Baadban 0

آرمی چیف کی طرف سے پارلیمنٹ کو اعتماد میں لینا خوش آئند ہے ای پی ای نیوز ایجنسی رپورٹ کے مطابق بلاول بھٹو زرداری کآ کھنا ھے اپوزیشن کو گھسیٹ رھے ھے دھشت گرد تنظیمیں کے سربراہ کھلے عام گھوم رھے ھے

March 6, 2019 Baadban 0

آرمی چیف کے پارلیمنٹ کو اعتماد میں لینے پر خوشی ہوئی ، بلاول بھٹو اپوزیشن کا احتساب لیکن کالعدم تنظیموں کا احتساب کیوں نہیں،؟ پلوامہ […]