وزیراعظم ہاؤس نے عوامی ردعمل کے بعد صدارتی آرڈیننس کے تحت معاف کیے گئے 208 ارب قرض کے ارڈر کو واپس لینے کا فیصلہ کر لیا