ماہرین کا خیال ہے کہ دسمبر کے پہلے ہفتے تک کرونا کی دوسری لہر اس حد تک خطرناک ہو جانے کا امکان ہے کہ کینیڈا جیسے کم آبادی والے ملک میں روزانہ کی بنیاد پر دس ہزار کرونا متاثرین سامنے آنے کا اندیشہ ہے جبکہ حکومتی ماہرینِ صحت زیادہ محتاط رویہ اختیار کئے ہوئے ہیں اِس لئے وہ حکومت کو باور کرا رہے ہیں کہ اگر ابھی سے سخت ترین اقدامات نہ کئے گئے تو کرسمس سے پہلے کینیڈا میں روزانہ نئے کرونا متاثرین کی تعداد بیس ہزار اور کرسمس کے بعد ساٹھ ہزار تک پہنچ سکتی ہے Click on the link to see full news on BAADBAN TV

ماہرین کا خیال ہے کہ دسمبر کے پہلے ہفتے تک
کرونا کی دوسری لہر اس حد تک خطرناک ہو جانے کا امکان ہے کہ کینیڈا جیسے کم آبادی والے ملک میں روزانہ کی بنیاد پر دس ہزار کرونا متاثرین سامنے آنے کا اندیشہ ہے
جبکہ حکومتی ماہرینِ صحت زیادہ محتاط رویہ اختیار کئے ہوئے ہیں اِس لئے وہ حکومت کو باور کرا رہے ہیں کہ اگر ابھی سے سخت ترین اقدامات نہ کئے گئے تو کرسمس سے پہلے کینیڈا میں روزانہ نئے کرونا متاثرین کی تعداد بیس ہزار اور کرسمس کے بعد ساٹھ ہزار تک پہنچ سکتی ہے🤔
ان اطلاعات کے پیشِ نظر کینیڈین وزیر اعظم جسٹن ٹروڈو آج دن ساڑھے گیارہ بجے براہ راست قوم سے مخاطب ہو کر اپنا واضح پیا فام دینا چاہتے ہیں
“گھروں میں رہو “
Stay Home
جبکہ کینیڈا کے سب سے بڑے صوبے انٹاریو کے پریمئیر بھی آج سہ پہر ساڑھے تین بجے سخت ترین اقدامات کا اعلان کرنے والے ہیں
ابتدائی طور پر باربر شاپس ، مینی کیور اینڈ پیڈی کیور سپاٹس اور جِمز کے حوالے سے احتیاطی اقدامات کا اعلان متوقع ہے
اِدھر کینیڈا اور امریکہ کے درمیان غیر ضروری سفر پر عائد پابندیوں کو بھی مزید ایک ماہ کی توسیع دے دی گئی ہے
اس پابندی کا دوبارہ جائزہ اکیس دسمبر کو لیا جائے گا
امریکہ سے موصولہ اطلاعات کے مطابق گزشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران وہاں کرونا سے متاثر ہونے والوں کی تعداد ایک لاکھ اسی ہزار سے زائد تھی
نارتھ امریکہ کے تیسرے ملک میکسیکو میں کرونا سے وفات پا جانے والوں کی تعداد ایک لاکھ سے تجاوز کر چکی ہے

Be the first to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.


*