سینٹ کے شفاف الیکشن کیلئے وفاقی حکومت سے بات کرنے کے لیے تیار، وزیر اعلی سندھ۔ میثاق جمہوریت اپنی جگہ مگر آئین کہتا ہے صدر اور وزیراعظم کے سوا تمام الیکشن خفیہ رائے دہی سے ہونگے۔ وفاقی حکومت اپنی آمدن میں ایک روپے کا بھی اضافہ نہیں کر سکی، جس کے باعث سندھ کی مشکلات بڑھ گئی ہیں Click on the link to see full news on BAADBAN TV

نی جگہ مگر آئین کہتا ہے صدر اور وزیراعظم کے سوا تمام الیکشن خفیہ رائے دہی سے ہونگے ، مراد علی شاہ وفاق کی آمدن نہ بڑھنے سے سندھ کی مشکلات میں اضافہ ہوا، پنجاب میں گندم کی قلت بالائے فہم ہے ، میڈیا سے گفتگو

خیرپور (نمائندہ دنیا) سندھ کے وزیر اعلٰی سید مراد علی شاہ نے کہا ہے کہ سینیٹ کے شفاف الیکشن کے لیے ہم وفاقی حکومت سے بات چیت کرنے کو تیار ہیں۔ جیلانی ہاؤس، خیر پور میں سابق وزیراعلٰی سندھ سید قائم علی شاہ سے ان کی بیٹی اور سیدہ نفیسہ شاہ ایم این اے سے ان کی ہمشیرہ کے انتقال پر تعزیت اور فاتحہ خوانی کے بعد میڈیا سے گفتگو میں سید مراد علی شاہ نے کہا کہ میثاقِ جمہوریت اپنی جگہ مگر ملک میں آئین بھی تو ہے ۔ آرٹیکل 226 میں صاف لکھا ہے کہ صدر اور وزیراعظم کے سوا تمام الیکشن خفیہ ہوں گے ۔ آئینی ترمیم اورآرڈیننس لانے کے لیے کسی بھی سیاسی جماعت سے مشاورت نہیں کی گئی۔ وزیراعلٰی سندھ نے کہا کہ ڈھائی برس میں وفاقی حکومت اپنی آمدن میں ایک روپے کا بھی اضافہ نہیں کر سکی، جس کے باعث سندھ کی مشکلات بڑھ گئی ہیں۔ وفاق کی آمدن میں سندھ 57.5 فیصد کا حصہ دار ہے ۔ پنجاب میں گندم کی قلت بالائے فہم ہے ۔ امن کی خاطر سندھ پولیس نے بہت قربانیاں دی ہیں۔ ہم نے بھی تنخواہیں دیگر صوبوں کے برابر کر دی ہیں۔ وزیر اعلٰی سندھ نے خیر پور کے وسان ہاؤس پہنچ کر وزیر اعلٰی کے معاون خصوصی نواب خان وسان اور سندھ کابینہ کے سابق رکن منظور حسین وسان سے ملاقات کی۔ سید مرادعلی شاہ نے رانی پور میں پیر سید فضل شاہ جیلانی اور پیر سید پیار علی شاہ جیلانی سے ان کی والدہ کے انتقال پر تعزیت اور فاتحہ خوانی کی