الیکشن کمیشن نے خفیہ بیلٹ کے ذریعے سینیٹ انتخابات کی تیاریاں مکمل کرلیں جنرل نشستوں کے لیے سفید، خواتین کے لیے گلابی، ٹیکنوکریٹ کے لیے سبزاوراقلیت کے لیے زرد بیلٹ پیپر ہوں گے، ذرائع ملکی تاریخ میں پہلی مرتبہ الیکشن کمیشن نے سینیٹ امیدواروں سے غیرقانونی سرگرمیوں میں ملوث نہ ہونے اورووٹ فروخت نہ کرنے کا حلف نامہ لے لیا Click on the link to see full news on BAADBAN TV

الیکشن کمیشن نے خفیہ بیلٹ کے ذریعے سینیٹ انتخابات کی تیاریاں مکمل کرلیں
جنرل نشستوں کے لیے سفید، خواتین کے لیے گلابی، ٹیکنوکریٹ کے لیے سبزاوراقلیت کے لیے زرد بیلٹ پیپر ہوں گے، ذرائع
ملکی تاریخ میں پہلی مرتبہ الیکشن کمیشن نے سینیٹ امیدواروں سے غیرقانونی سرگرمیوں میں ملوث نہ ہونے اورووٹ فروخت نہ کرنے کا حلف نامہ لے لیا

الیکشن کمیشن کے ذرائع کے مطابق الیکشن کمیشن نے خفیہ بیلٹ کے ذریعے سینیٹ الیکشن کی تیاری شروع کردی ہے اور اس حوالے سے ہدایات جاری کردی گئی ہیں۔ الیکشن ذرائع کے مطابق ووٹرز کو چار بیلٹ پیپرز جاری کیے جائیں گے، جنرل نشستوں کے لیے سفید، خواتین کے لیے گلابی، ٹیکنوکریٹ کے لیے سبزاوراقلیت کے لیے زرد بیلٹ پیپر ہوں گے۔

امیدواروں کے نام حروف تہجی کے ساتھ  ترتیب سے درج ہوں گے، ووٹرزبیلٹ پیپرز حاصل کرنے کے بعد پردہ دار جگہ ووٹ کے لیے بال پین کا استعمال کریں گے راستے میں ووٹر کسی دوسرے ووٹر یا کسی دوسرے شخص سے نہیں ملیں گے۔ ووٹرز کے پولنگ اسٹیشن میں موبائل فون لے جانے پرپابندی ہوگی اگرووٹرغلطی سے موبائل اندرلے آئے تو پولنگ آفیسر کے پاس جمع کرانا ہوگا۔

اس حوالے سے الیکشن کمیشنر خیبرپختونخوا شریف اللہ سے رابطہ کیا گیا تو انہوں نے کہا کہ الیکشن کمیشن آف پاکستان کی ہدایات کے مطابق سینٹ الیکشن کے لیے انتظامات مکمل ہے اورہدایات جاری کردی گئی ہیں آئین اور قانون کے مطابق سینٹ انتخابات کرائے جائیں گے الیکشن کمیشن آف پاکستان کی جانب سے جو ہدایات جاری کی گئی ہیں خیبرپختونخوا اسمبلی میں سیاسی جماعتوں کے پارلیمانی لیڈرز سے بھی مشاورت کریں گے۔