دھاندلی الزامات:کے پی اپوزیشن کا ہڑتالوں کا اعلان

یہ فیصلہ ہفتہ کو پشاور میں اے این پی کے رہنما میاں افتخار حسین کی سربراہی میں متحدہ اپوزیشن کے ایک مشاورتی اجلاس میں کیا گیا۔

اجلاس کے بعد میاں افتخار نےمیڈیا سے گفتگو میں کہا کہ’بڑے پیمانے پر دھاندلیوں ‘کی وجہ سے اپوزیشن پارٹیوں کو صوبے میں بلدیاتی الیکشن قابل قبول نہیں۔

انہوں نے اپنی پارٹی قیادت کے جذبات دہراتےہوئے پاکستان تحریک انصاف کی صوبائی حکومت سے اخلاقی بنیادوں پر استعفی دینے کا مطالبہ کیا۔ ’اگر حکومت مستعفی نہ ہوئی تو ہم اپنا احتجاج جاری رکھیں گے‘۔

انہوں نے بتایا کہ تین جماعتی اپوزیشن اتحاد صوبے کی دوسری پارٹیوں سے رابطے کرتے ہوئے انہیں احتجاج میں شرکت کی دعوت دے رہا ہے ۔

دوسری جانب، خیبر پختونخوا کی اپوزیشن پارٹیوں کے کارکنوں کے ایک گروپ نے بلدیاتی الیکشن میں مبینہ دھاندلیوں پر اسلام آباد میں احتجاج کیا۔

اپوزیشن کارکن اسلام آباد میں الیکشن کمیشن کے دفتر کے باہر اپنا احتجاج ریکارڈ کرانے کیلئے جمع ہوئے اور بعد میں انہوں نے بنی گالہ میں عمران خان کی رہائش گاہ کا رخ کر لیا، جہاں کسی بھی ناخوشگوار واقعہ سے بچنے کیلئے پولیس کی بھاری نفری تعینات ہے۔

خیال رہے کہ دو دن پہلے خیبر پختونخوا کے وزیر اعلی پرویز خٹک نے دوٹوک الفاظ میں پی ٹی آئی پر عائد دھاندلی کے الزامات مسترد کرتے ہوئے جوڈیشل کمیشن یا تحقیقاتی ٹیم بنانے کی پیشکش کی تھی۔

اتحادی پارٹیوں جماعت اسلامی اور عوامی جمہوری اتحاد (خٹک) کے ہمراہ پشاور میں ایک پریس کانفرنس کرتے ہوئے پرویز خٹک نے شفاف انداز میں الزامات کی تحقیقات کا عزم بھی کیا ۔vb

Be the first to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.